انسداد اسمگلنگ کا انچارج اور 3 اہلکار اسمگلرز سے تعاون پر رنگے ہاتھوں گرفتار

انسداد اسمگلنگ کا انچارج اور 3 اہلکار اسمگلرز سے تعاون پر رنگے ہاتھوں گرفتار

کراچی ( سہیل افضل ) ڈائریکٹوریٹ آف انٹیلی جنس اینڈ انوسٹی گیشن کسٹمز کراچی کے اینٹی اسمگلنگ آرگنائزیشن( اے ایس او )ونگ کے انچارج اور دیگر 3 اہلکار اسمگلرز سے تعاون کے الزام میں رنگے ہاتھوں گرفتار، اہلکار بلوچستان میں جاکر اسمگلرز کی 2؍ گاڑیاں اپنی نگرانی میں لارہے تھے.

حساس ادارے کی تفتیش میں انکشاف، افسران کو ڈیوٹی آف کردیا، ڈائریکٹر کسٹمز انٹیلی جنس ، اے ایس او انچارج کیخلاف ماضی میںشکایات آچکی، ذرائع، ڈائریکٹر کسٹمز انٹیلی جنس نے اے ایس او کے انچارج ارشاد شاہ سمیت 4 اہلکاروں کو ڈیوٹی آف کر کے ان کیخلاف الزام کی تحقیقات شروع کر دی ہے۔ 

تفصیلات ایک روز قبل کسٹمزانٹیلی جنس اے ایس او ونگ کے انچارج ارشاد شاہ ،انٹیلی جنس افسر کفیل عدنان اور2سپاہی موچکو چیک پوسٹ سے آگے بلوچستان کی حدود میں جاکر اسمگلرز کی 2؍ گاڑیوں کو اپنی نگرانی میں لا رہے تھے کہ حساس ادارے کے اہلکاروں نے انھیں روک کر تفتیش کی تو یہ انکشاف ہوا کہ دونوں گاڑیوں میں اسمگلنگ کا سامان ہے اور ان اسمگلرز کو تحفظ دینے والے اہلکار وں کا تعلق کسٹمز انٹیلی جنس سے ہے جس پر ان ا ہلکاروں اور ایک سینئر افسر کو بھی طلب کر کے کئی گھنٹے اس معاملے کی تفتیش کی گئی.

بعد ازاں سینئر افسران کی جانب سے معاملے کی تحقیقات پر انہیں جانے کی اجازت ملی،ذرائع کے مطابق ابتدائی مرحلے میں انھیں ڈیوٹی آف کیا گیا ہے تاہم اعلیٰ افسران کی ایک ٹیم اس معاملے کی تفتیش کرے گی جس کے بعد ان کے خلاف مزید کارروائی کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ کیا جائے گا۔ 

دوسری جانب ڈائریکٹر کسٹمز انٹیلی جنس کراچی انجینئر حبیب نے جنگ کے رابطہ کرنے پر ان افسران کو ڈیوٹی آف کرنے کی تصدیق کی تاہم ان کا کہنا تھا کہ ابھی یہ صرف الزام ہے جب تک معاملے کی تحقیقات نہیں ہوتی حتمی بات نہیں کی جاسکتی، درست صورتحال کے لئے کچھ دن انتظار کر لیں۔

 دوسری جانب کسٹمز ذرائع کا کہنا ہے کہ اے ایس او انچارج پرنسپل اپریزر ہیں انھیں فیلڈ ڈیوٹی پر رکھنا ہی غلط ہے ،ان کے بارے میں ماضی میں بھی ایسی شکایات آچکی ہیں ۔

Leave a Comment