PTI میں دھڑے بندی، 21 ارکان کا الگ گروپ بنانے کا عندیہ

PTI میں دھڑے بندی، 21 ارکان کا الگ گروپ بنانے کا عندیہ

اسلام آباد(حیدرشیرازی)تحریک انصاف میں دھڑے بندی ‘21 ارکان اسمبلی نے اپنا الگ گروپ بنانے کا عندیہ دیدیا۔سنی اتحاد کونسل میں شامل تحریک انصاف کی پارلیمانی پارٹی میں اختلافات شدت اختیار کرگئے ۔

ذرائع کے مطابق شہریار آفریدی کے استعفے سے متعلق بیان کے بعد27 سے زائد ممبران نے استعفوں پر مشاورت کی جبکہ شاندانہ گلزار اور شیر افضل مروت سمیت متعدد ممبران نے پارٹی قیادت کی نااہلی پراحتجاج بھی کیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی ارکان اسمبلی نے اختلافات کی وجہ سے پارلیمانی پارٹی اجلاسوں میں شرکت سےمعذرت کی اور رہنماؤں نے شکوہ کیا کہ سینیٹ میں پارلیمانی لیڈر اور قومی اسمبلی میں سینئرقیادت کمیٹیوں کےلیے کمپرومائزڈ ہے۔ 

ذرائع نے بتایاکہ ارکان کا مؤقف ہے کہ بانی پی ٹی آئی اور رہنماؤں کی رہائی کی بجائے قیادت عہدوں کیلئے کوشاں ہے۔

 ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی کے 21ارکان اسمبلی نے اپنا الگ گروپ بنانے کا عندیہ دے دیا اور پارٹی چیئرمین بیرسٹرگوہر اور جنرل سیکرٹری عمرایوب خان کو سنجیدہ کوشش کرنے کا پیغام بھجوایا۔

دوسری جانب جیو نیوز سے گفتگو میں رکن قومی اسمبلی شاندانہ گلزار کا کہنا ہے کہ اگر ہم بانی پی ٹی آئی کو جیل سے باہر نہیں نکال سکتے تو بہتر ہے استعفیٰ دے دیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم یہاں ڈیسک بجا رہے کمیٹی کمیٹی کھیل رہے ہیں‘اس سے بہتر ہے گھر بیٹھ جائیں‘ شہریارآفریدی نے استعفے کا کہا تو میں نے دھمکی دی کہ ہم بھی استعفے دیں گے۔

Leave a Comment