ہم اداروں کے خلاف نہیں افراد کے خلاف ہیں، عارف علوی

فوٹو بشکریہ پی ٹی آئی/ ایکس
فوٹو بشکریہ پی ٹی آئی/ ایکس

رہنما تحریک انصاف اور سابق صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ ہم اداروں کے خلاف نہیں افراد کے خلاف ہیں۔

کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق صدر مملکت کا کہنا تھا کہ کل افسوس ہوا کہ ہمارا کیمپ اکھاڑ دیا گیا تھا، ان بارہویں کھلاڑیوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں جو ہمیں مقبول کر رہے ہیں۔

ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ ہمارا نشان بھی چھینا گیا، سب جانتے ہیں کہ کیا ہو رہا ہے۔ میڈیا، عدلیہ اور ریاست بند گلی میں ہو تو کوئی بھی نقصان کرسکتا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ بانی پی ٹی آئی نے کہا کہ 1971 میں یحییٰ خان کی وجہ سے نقصان ہوا، بھٹو نے حمود الرحمان کمیشن کو شائع ہونے نہیں دیا تاکہ پردہ رہے۔ ہم نے حمود الرحمن کمیشن سے کچھ سیکھا نہ کارگل سے۔

عارف علوی نے کہا کہ جب پریشر پڑے گا تو پریشر کوکر پھٹے گا۔ دو سال سے کہہ رہے ہیں مذاکرات ہونے چاہیے لیکن مذاق اُڑایا جاتا ہے۔ یہ معیشت ٹھیک نہیں ہوگی جب تک ساتھ کھڑے نہیں ہوں گے۔

سابق صدر کا کہنا تھا کہ فوج کا ملکی سیاست میں کردار نہیں ہے۔

رہنما تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ میں ابھی بتا سکتا ہوں کس کس کو کیا کیا کہا گیا ہے، ملک صحیح راہ پر گامزن ہوسکتا ہے اگر انا ختم ہوجائے۔

انہوں نے کہا کہ فارم 47 والی حکومت کچھ نہیں کرسکتی۔ مینڈیٹ چرا کر کچھ نہیں ہوسکتا، عوام سے پناہ مانگو عوام رگڑ دے گی۔

Leave a Comment