Tuesday, February 7, 2023
Online Free Business listing Directory to Grow your Sales
HomeLatest Breaking newsگورنر نے سمری پر دستخط نہیں کیے لیکن پنجاب اسمبلی ٹُوٹ گئی

گورنر نے سمری پر دستخط نہیں کیے لیکن پنجاب اسمبلی ٹُوٹ گئی


گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمان کی جانب سے مقررہ 48 گھنٹوں کے اندر صوبائی اسمبلی تحلیل نہ کرنے کے بعد صوبائی اسمبلی ازخود تحلیل ہو گئی ہے۔ 
اس کے ساتھ ہی وزیراعلٰی پنجاب چودھری پرویز الٰہی اور صوبائی کابینہ اپنے عہدوں پر برقرار نہیں رہے تاہم نگراں وزیراعلٰی کے تقرر تک پرویز الٰہی قائم مقام وزیراعلٰی کے طور پر اپنا کام جاری رکھیں گے۔
تاہم جمعے کو گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمان نے پنجاب اسمبلی کی تحلیل کے بعد نگراں وزیراعلٰی کے نام پر اتفاق رائے کے لیے قائم مقام وزیراعلٰی اور قائد حزب اختلاف کو مراسلے جاری کر دیے ہیں۔
وزیراعلٰی پنجاب چودھری پرویز الٰہی نے جمعرات کے روز عمران خان سے ملاقات کے بعد صوبائی اسمبلی تحلیل کرنے کی سمری پر دستخط کیے تھے۔
جمعرات کو ہی یہ سمری گورنر ہاؤس پہنچ گئی تھی جس کی تصدیق گورنر محمد بلیغ الرحمان نے بھی اپنی ٹویٹ میں کر دی تھی۔
بعد ازاں وزیراعلٰی پنجاب چودھری پرویز الٰہی کے صاحبزادے مونس الٰہی نے اپنی ٹویٹ میں گورنر ہاؤس کی جانب سے سمری کی وصولی کی کاپی شیئر کی۔
اس کاپی پر جمعرات کی رات 10 بج کر 10 منٹ کا وقت درج تھا، اس کے مطابق 48 گھنٹوں بعد سنیچر کی رات 10 بج کر 10 منٹ پر ازخود تحلیل ہوگئی ہے۔
گورنر پنجاب نے اسمبلی تحلیل کرنے کی سمری پر دستخط نہیں کیے
گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمان نے سنیچر کی رات 9:45 پر ایک ٹوئٹر بیان میں کہا کہ ’میں نے فیصلہ کیا ہے کہ میں اسمبلی کی تحلیل کے عمل کا حصہ نہیں بنوں گا۔‘
’ایسا کرنے سے آئینی عمل میں کسی قسم کی رکاوٹ کا کوئی اندیشہ نہیں کیونکہ آئین اور قانون میں صراحت کے ساتھ تمام معاملات کے آگے بڑھنے کا راستہ موجود ہے۔‘





Source link

RELATED ARTICLES

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular

Recent Comments