چیئرمین اینٹی کرپشن سندھ نے ہٹانے پر بڑے انکشافات کردیے

چیئرمین اینٹی کرپشن سندھ نے ہٹانے پر بڑے انکشافات کردیے

سندھ حکومت نے چیئرمین اینٹی کرپشن فرحت علی جونیجو کو عہدے سے ہٹادیا، فرحت جونیجو کو محکمہ سروسز رپورٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

فرحت علی جونیجو پولیس سروس آف پاکستان کے گریڈ 21 کے افسر ہیں۔

فرحت جونیجو نے وزیر اینٹی کرپشن محمد بخش مہر کو خط میں لکھا کہ مجھے کرپشن میں حصہ کے طور پر لفافہ دیا گیا جسے واپس کردیا تھا۔ 

انہوں نے کہا کہ پرائیویٹ شخص ڈائریکٹر اینٹی کرپشن کی ملی بھگت سے کرپشن کا سسٹم چلاتا ہے۔

محکمہ اینٹی کرپشن ماہانہ 6 سے 7 کروڑ روپے مختلف محکموں سے رشوت لے رہا ہے، ڈپٹی ڈائریکٹر سے 15 لاکھ، سرکل افسر سے 10 لاکھ روپے ماہانہ رشوت مقرر کر رکھی ہے۔

دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ پرائیویٹ شخص صوبائی وزیر محمد بخش مہر کا قریبی دوست ہے۔

Leave a Comment