ٹیکس دینےکی استعداد رکھنے والے نان فائلرز کو فوری ٹیکس نیٹ میں لایا جائے، وزیر اعظم

فائل فوٹو۔
فائل فوٹو۔

وزیراعظم شہباز شریف کو ایف بی آر اصلاحات پر اعلیٰ سطح کے جائزہ اجلاس میں بریفنگ کے دوران بتایا گیا ہے کہ 45 لاکھ افراد کی نشاندہی ہوگئی جو استعداد کے باوجود ٹیکس نیٹ میں نہیں۔

وزیراعظم کی ٹیکس دینےکی استعداد رکھنے والے نان فائلرز کو فوری ٹیکس نیٹ میں لانے کی ہدایت کردی۔

وزیراعظم نے کہا کہ ٹیکس دینےکی استعداد رکھنے والے نان فائلرز کو فوری ٹیکس نیٹ میں لایا جائے۔ انھوں نے کسٹمز اپریزرز کا صوابدیدی اختیار فوری طور پر ختم کرنے کی ہدایت کی۔ 

وزیراعظم کو بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ چند ہفتوں میں 3 لاکھ سے زائد نئے ٹیکس دہندگان نے اپنے گواشورے جمع کروائے، جبکہ انڈر انوائسنگ اور جعلی سیلز ٹیکس ریفنڈز کرنے والی 4 ہزار کمپنیوں کی نشاندہی کر کے ریفنڈز روکے جاچکے ہیں۔ 

وزیر اعظم نے کہا ٹیکس چوری میں ملوث اور ان کا ساتھ دینے والے افسران و اہلکاروں کو بھی سزا دی جائے گی۔ پاکستانی عوام کے پیسوں پر ڈاکا ڈالنے والوں اور ان کا ساتھ دینے والوں کو معاف نہیں کیا جائے گا۔ 

انھوں نے مزید کہا کہ ایسے ٹیکس دہندگان جو بروقت اپنی ذمہ داری پوری کرتے ہیں ان کی اس امر کیلئے پذیرائی کی جائے گی۔ 

وزیراعظم نے کہا ٹیکس چوری کا تخمینہ اور اس کی روک تھام کے حوالے سے ایک جامع رپورٹ پیش کی جائے۔ 

انکا کہنا تھا کہ ٹیکس کے حوالے سے عالمی سطح پر رائج بہترین نظام کو پاکستان میں نافذ کیا جائے گا۔

Leave a Comment