وزیراعظم عمران خان کا کورونا ٹیسٹ کرانے کا فیصلہ

0
17


ایدھی فاؤنڈیشن کے سربراہ فیصل ایدھی کا کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد وزیراعظم عمران خان  نے بھی کورونا ٹیسٹ کرانے کا فیصلہ کرلیا۔

وزیراعظم عمران خان کے فوکل پرسن برائے کورونا وائرس ڈاکٹر فیصل نے بتایا کہ کچھ روز قبل فیصل ایدھی نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی تھی۔

وزیراعظم کے ہمراہ کورونا وائرس کے حوالے سے صورتحال پر بریفنگ دیتے ہوئے ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ ہم نے وزیراعظم کو مشورہ دیا تھا کہ وہ بھی کورونا وائرس کا ٹیسٹ کرائیں کیوں کہ انہوں نے چند روز قبل فیصل ایدھی سے ملاقات کی تھی۔

 وزیراعظم اوران کی فیملی کا پہلے کورونا ٹیسٹ ہوچکا تھا،فردوس عاشق اعوان

وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کاکہنا ہے کہ  وزیراعظم کا کورونا کا ٹیسٹ ابھی نہیں ہوا کل ہوگا،  وزیراعظم کا کورونا ٹیسٹ کے لیے کل آفس میں ہی سیمپل لیا جائے گا۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ  وزیراعظم آفس باقاعدگی سے ڈِس انفیکٹ ہوتا ہے، ہر دوسرے دن پورے پی ایم ہاؤس کوڈس انفیکٹ کیا جاتا ہے،  وزیراعظم آفس میں اجلاس ہوتے ہیں اس لیے ڈس انفیکٹ ہونا ضروری ہوتا ہے۔

فردوس عاشق اعوان نے بتایا کہ  وزیراعظم اوران کی فیملی کا پہلے کورونا ٹیسٹ ہوچکا تھا جومنفی آیا، فیصل ایدھی کی وجہ سے پی ایم ہاؤس میں کون کون متاثر ہوا یہ جاننے کیلئے دیگر افراد کا بھی ٹیسٹ ہونا چاہیے، فیصل ایدھی کی وزیراعظم سے زیادہ بات چیت نہیں ہوئی انہوں نے وزیراعظم کو صرف چیک دیا۔

خیال رہے کہ سماجی کارکن فیصل ایدھی اس وقت اسلام آباد میں موجود ہیں جن کا کورونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آگیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ فیصل ایدھی کا کورونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد ایسے افراد کی فہرست تیار کی جارہی ہے جن سے انہوں نے حالیہ دنوں میں ملاقات کی ہے۔

فیصل ایدھی نے گزشتہ دنوں وزیراعظم عمران خان سے بھی ملاقات کی تھی اور انہیں کورونا ریلیف فنڈ کے لیے چیک پیش کیا تھا۔

ذرائع کے مطابق فیصل ایدھی کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد ایدھی فاؤنڈیشن کے کچھ عملے اور فیصل ایدھی کے اہلخانہ کے بھی کورونا ٹیسٹ کرائے جائیں گے۔

ایدھی حکام کا کہنا ہےکہ فیصل ایدھی ایک ہفتہ قبل کراچی سے لاہور گئے تھے اور 5 دن قبل انہوں نے اسلام آباد میں وزیراعظم سے ملاقات کی، ان کا 2 روز قبل کورونا کا ٹیسٹ کروایا تھا جس کی آج رپورٹ آئی ہے۔





Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here