Tuesday, February 7, 2023
Online Free Business listing Directory to Grow your Sales
HomeLatest Breaking newsنگراں وزیراعلیٰ کا تقرر:خیبر پختونخوا میں اعظم خان کے نام پر اتفاق

نگراں وزیراعلیٰ کا تقرر:خیبر پختونخوا میں اعظم خان کے نام پر اتفاق


 خیبرپختونخوا میں نگراں وزیراعلیٰ کی تقرری کے معاملے پر  اپوزلیشن لیڈر اکرم خان درانی اور وزیر اعلیٰ محمود خان کے درمیان مشاورت کے بعد اعظم خان کے نام پر اتفاق رائے ہوگیا ہے جبکہ پنجاب میں تاحال  ڈیڈلاک  برقرار ہے اور ابھی تک کسی ایک نام پر اتفاق نہیں ہو سکا۔ 
جمعے کی شب خیبرپختونخوا اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اکرم درانی نے وزیراعلیٰ محمود خان اور پرویز خٹک سے ملاقات سپیکر ہاؤس میں ملاقات کی۔
ملاقات کے بعد دونوں رہنماؤں نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ  ملاقات کے دوران نگراں وزیراعلی پر اتفاق رائے ہوگیا ہے اور متفقہ طور پر اعظم خان  کے نام پر اتفاق کیا گیا۔
خیال رہے کہ اعظم خان سابق چیف سیکرٹری سمیت دیگر عہدوں پر رہ چکے ہیں۔ 
دوسری جانب پنجاب اسمبلی میں حکمران جماعت اور اپوزیشن کی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس سپیکر سبطین خان کی صدارت میں دو گھنٹے سے زائد جاری رہا۔ 
اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ملک احمد خان نے کہا کہ ’حکومت کی جانب سے متنازع شخصیات کے نام دیے گئے۔ اگر احد چیمہ کو یہ ذمہ داری دی جاتی تو بہترین طریقے سے کام کرتے۔ مجھے بتائیے کہ احد چیمہ سے زیادہ بہتر کون ہے۔‘
انہوں نے کہا کہ ’محسن نقوی کو ذاتی پسند یا ناپسند کی وجہ سے مسترد کیا گیا۔ مجھ سے نام پوچھے تو میں محسن نقوی کا کہوں گا کیونکہ وہ غیر متنازع ہیں اور الیکشن کمیشن کے پاس یہی چار نام جائیں گے۔‘
ملک احمد خان کا کہنا تھا کہ سیاسی معاملات عدالت میں جائیں گے تو افسوس ہو گا۔ 
کمیٹی کے رکن حسن مرتضیٰ نے کہا کہ ’پرویز الٰہی نے پہلے بیان دیا کہ معاملہ سپریم کورٹ لے کر جائیں گے، اب معاملہ الیکشن کمیشن میں جائے گا اور آئین کے تحت فیصلہ ہو گا۔‘
نگراں وزیراعلیٰ کا تقرر:خیبر پختونخوا میں اعظم خان کے نام پر اتفاق 745995a4 fea4 4c3f 88e2 e48cc22482e2 w1200 r1
پارلیمانی کمیٹی کے ارکان نے بتایا کہ ’نگراں وزیراعلیٰ پنجاب کی تقرری کا معاملہ اب الیکشن کمیشن کے پاس چلا گیا ہے‘ (فوٹو: اے ایف پی)
انہوں نے کہا کہ جب ہاؤس چھوٹا تھا تو لوگ بڑے تھے اب ہاؤس بڑا اور لوگ چھوٹے ہیں۔ اتفاق رائے نہیں کر پا رہے ڈکٹیشن دے کر بھیجا جاتا ہے کہ ماننا ہی نہیں۔‘
پالیمانی کمیٹی کے رکن ملک ندیم کامران نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ سابق وزیر اعلی پرویز الٰہی نے بیان جاری کیا کہ  ہم سپریم کورٹ جائیں گے جو اپنی کمیٹی پر عدم اعتماد ہے۔’سیر حاصل بحث کے باوجود کسی نام پر اتفاق نہیں ہو سکا۔‘
سپیکر پنجاب اسمبلی سبطین خان کی پنجاب اسمبلی کے احاطے میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ  نگران وزیر اعلی کےلیئ دو، دو نام حکومت و اپوزیشن کےلیے آگئے ہیں،حکومت اور اپوزیشن دونوں کو آپس میں ہم آہنگی پیدا کرنی چاہیے،اگر نیتیں سیدھی ہیں تو فیصلہ پانچ منٹ میں ہوجائے گا۔ 
اس موقع پر پی ٹی آئی رہنبما راجہ بشارت نے کہا کہ ’فیصلہ یہ ہوا ہے کہ دونوں اطراف کی نام الیکشن کمیشن کے پاس جائیں گے، الیکشن کمیشن چاروں امیدواروں کے کردار کو سامنے رکھ کر بہتر شخص کا نام لایاجائے۔‘





Source link

RELATED ARTICLES

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular

Recent Comments