لاک ڈاؤن: شب برأت کے موقع پر قبرستان جانے پر پابندی عائد | پاکستان

0
21


کورونا وائرس سے پیدا صورتحال کے پیش نظر مذہبی اجتماعات پرپابندی ہوگی اور مزارات پرعوام کا داخلہ ممنوع ہوگا: محکمہ داخلہ سندھ— فوٹو:فائل

محکمہ داخلہ سندھ نے کورونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن میں شب برأت کے موقع پر قبرستان جانے پر پابندی عائد کردی جس کی وجہ سے شہریوں کی بڑی تعداد قبرستان میں داخل نہ ہوسکی۔

محکمہ داخلہ سندھ نے کورونا وائرس سے پیدا صورتحال کے پیش نظر مذہبی اجتماعات پرپابندی عائد کی تھی اور مزارات پرعوام کا داخلہ ممنوع قرار دیا تھا۔

محکمہ داخلہ سندھ نے شب برأت کے موقع پرلوگوں کے قبرستان جانے پر بھی پابندی عائد کی ہے۔

شب برأت کے موقع پر کراچی کے سخی حسن قبرستان کے باہر شہریوں کا رش لگ گیا تاہم پولیس نے انہیں اندر داخل ہونے سے روک دیا جس کے بعد شہریوں نے قبرستان کے داخلی دروازے پر ہی فاتحہ خوانی کی۔

خیال رہے کہ آج رات شب برات مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ منائی جارہی ہے جس پر علمائے کرام نے بھی عوام سے گھروں میں عبادت کرنے کی اپیل کی ہے۔

شہریوں کو قبرستان جانے کی اجازت نہیں ہے: کراچی پولیس چیف

دوسری جانب کراچی پولیس چیف غلام نبی میمن کا کہنا ہے کہ شب برأت کے سلسلے میں پولیس گشت بڑھایا گیا ہے جبکہ لاک ڈاؤن کے حوالے سے 200 مقامات پر ناکہ بندی پہلے سے جاری ہے۔

انہوں نے کہا کہ روزانہ کی طرح شام 5 بجے کے بعد مکمل لاک ڈاون ہوگا اور شہریوں کو قبرستان جانے کی اجازت نہیں ہے لہٰذا شہریوں سے اپیل ہے عبادات کا سلسلہ گھروں پر ہی جاری رکھیں۔

کراچی پولیس چیف نے مزید کہا کہ درخواست ہے مساجد میں بھی شب برأت کے حوالے سے لوگ جمع نہ ہوں۔

واضح رہے کہ کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے سندھ سمیت ملک بھر میں لاک ڈاؤن جاری ہے تاہم اس کے باوجود مہلک وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے۔





Source link

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here