شاہد آفریدی نے پاکستانی بیٹرز کے اسٹرائیک ریٹ کو پریشان کن قرار دیدیا

فوٹو: فائل
فوٹو: فائل

آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ 2024 کے ایمبیسیڈر اور پاکستان ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے کہا ہے کہ پاکستان کا بولنگ اٹیک بہترین اور بیٹنگ میں بھی اسٹرینتھ ہے لیکن تنگ کرنے والی چیز اسٹرائیک ریٹ ہے۔

ورلڈکپ کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ میرے خیال سے پاکستان کو فائنل کھیلنا چاہیے۔ ویسٹ انڈیز اور امریکا کی کنڈیشنز پاکستان کے حق میں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے اسپنرز آؤٹ آف فارم ہیں لیکن میں پُرامید ہوں کہ فارم میں واپس آجائیں گے۔ 

شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ پاکستان کا فاسٹ بولنگ اٹیک بہت ہی بہترین ہے، پاکستان کی بیٹنگ میں اسٹرنتھ ہے، لیکن تنگ کرنے والی چیز اسٹرائیک ریٹ ہے۔

انہوں نے کہا کہ 7 سے 14 اوورز تک اسٹرائیک ریٹ بہتر ہونا چاہیے، ان اوورز میں پر اوور رن ریٹ 8 سے 10 تک ہونا چاہیے۔

سابق کپتان کا کہنا تھا کہ عماد وسیم اور محمد عامر بہت تجربہ کار کھلاڑی ہیں۔ عماد اور عامر ویسٹ انڈیز کی لیگ کھیل چکے ہیں، ان کے اس تجربے سے فائدہ ہوگا۔

شاہد آفریدی نے کہا کہ صائم ایوب کو کافی موقع ملا ہے اور مل بھی رہا ہے، صائم اگر انگلینڈ سیریز میں پرفارم نہیں کرتے تو فخر کو اوپر موقع دینا چاہیے۔ فخر کو ویسٹ انڈیز کی پچز اور کنڈیشنز سوٹ کریں گی۔

اپنی بات جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دعاگو ہوں کہ صائم ایوب اچھا پرفارم کرے اور رضوان یا بابر کے ساتھ اوپن کرے۔

پاکستان ٹیم کی بولنگ پر بات کرتے ہوئے شاہد آفریدی نے کہا کہ دیکھا جائے تو دنیا میں انتی مضبوط بولنگ لائن کسی کی نہیں ہے، پاکستان کے پاس جتنے بڑے بولرز ہیں ان پر ذمہ داری بھی انتی ہی ہوگی۔

Leave a Comment