خیبرپختونخوا اسمبلی میں آئندہ مالی سال کیلئے بجٹ اجلاس شروع

(عامر شہزاد )خیبر پختونخوا اسمبلی میں آئندہ مالی سال کیلئے بجٹ اجلاس شروع ہو گیا ، صوبے کا کل حجم 1754 ارب روپے رکھا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کے پی کے اسمبلی میں وزیر خزانہ آفتاب عالم  بجٹ پیش کر رہے ہیں ،  سامنے آنے والی دستاویز کے مطابق آئندہ مالی سال کا بجٹ 100 ارب روپے سر پلس میں ہے، صوبائی حکومت کو وفاق سے ایک ہزار 212 ارب سے زائد ملنے کا امکان ہے جبکہ وفاقی کابل تقسیم محاصل سے 902 ارب 50 کروڑ ملنے کی توقع کی گئی ہے،دہشتگرد کی کیخلاف جنگ کے ایک فیصد کی مد میں 108 ارب 44 کروڑ ملنے کا امکان  ہے ،پن بجلی خالص منافع کی مد میں 33 ارب 9 کروڑ ملیں گے ،پن بجلی بقایاجات کی مد میں 78 ارب 21 کروڑ ملیں گے ،صوبائی حکومت 93 ارب 50 کروڑ اپنے وسائل سے اکٹھے کرے گی ،ٹیکسیشن کی مد میں صوبائی حکومت کا 63 ارب 18 کروڑ کا ہدف مقرر کیا گیا ہے ۔

دستاویزات میں مزید کہا گیا ہے کہ ضم اضلاع کیلئے 259 ارب 91 کروڑ ملنے کی توقع ہے ،وفاق سے ضم اضلاع کیلئے 72 ارب 60 کروڑ ملیں گے ،اضافی گرانٹ کی مد میں وفاق سے 55 ارب ملنے کی توقع  ہے ،ضم اضلاع کیلئے 76 ارب کا ترقیاتی فنڈ وفاق سے ملنے کا امکان ہے ،بے گھر افراد کی مد میں 17 ارب وفاق سے ملنے کی توقع ہے ،صوبائی حکومت آئندہ برس تنخواہوں ، پینشن اور گرانٹ کی مد میں ایک  ہزار 237 ارب سے زائد خرچ کرے گی ،صوبائی ملازمین کی تنخواہوں کی مد میں 246 ارب ، تحصیل ملازمین کی تنخواہوں میں 263 ارب خرچ ہونگے ،صوبائی حکومت پینشن کی مد میں 162 ارب 40 کروڑ سے زائد خرچ کرے گی ،جاری اخراجات کی مد میں 264 ارب 70 کروڑ خرچ کئے جائے گے ۔

تنخواہیں،ادویات، گندم سبسڈی

بجٹ دستاویزات میں کہا گیاہے کہ ایم ٹی آئی ہسپتالوں کے ملازمین کی تنخواہوں کیلئے 26 ارب 97 کروڑ خرچ کئے جائیں گے ،ایم ٹی آئی ہسپتالوں کے اخراجات کیلئے 28 ارب 68 کروڑ خرچ ہونگے ،ضم اضلاع میں تنخواہوں ، پینشن اور جاری اخراجات پر 144 ارب 62 کروڑ خرچ ہونگے ،صحت سہولت کارڈ کیلئے 34 ارب مختص ،صحت سہولت کارڈ میں 28 ارب بندوبستی اضلاع ، 6 ارب قبائلی اضلاع کیلئے ہونگے،10 ارب 97 کروڑ ادویات کی خریداری کیلئے مختص ،26 ارب 70 کروڑ گندم کی سبسڈی کیلئے مختص،طلبہ کو مفت کتب کی فراہمی کیلئے 9 ارب مختص ،بی آر ٹی کی سبسڈی کیلئے 3 ارب مختص ،ریلیف اقدامات کیلئے اڑھائی ارب روپے مختص کیےگئے ہیں۔

پناہ گاہیں، احساس پروگرام ،نوجوان ہنرپروگرام 

آئندہ بجٹ میں پناہگاہوں کیلئے 90 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں ،احساس روزگار  ، نوجوان پروگرام ، ہنر پروگرام کیلئے 12 ارب روپے مختص ،پروگرام کے تحت ایک  لاکھ نوجوانوں کو روزگار ملے گا ،احساس اپنا پروگرام کیلئے 3 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں جس کے تحت  5 ہزار گھر تعمیر کئے جائے گے ،سی آر بی سی پروجیکٹ کیلئے 10 ارب روپے مختص جس کے تحٹ  3 لاکھ ایکڑ اراضی سیراب ہوگی، نجی شعبے کے تعاون سے 4 بڑے منصوبے شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیاہے ،

جن میں دیر موٹر وے ، ڈی آئی خان موٹر وے ، بنوں لنک روڈ اور ہکلہ ۔ یارک موٹر وے شامل ہے ۔

Leave a Comment