حماس نے امریکی تجویز قبول کر لی

—فائل فوٹو
—فائل فوٹو

حماس نے اسرائیلی یرغمالیوں کی رہائی پر بات چیت کی امریکی تجویز قبول کر لی۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کا دعویٰ ہے کہ حماس نے اسرائیلی فوج کے مکمل انخلاء کی شرط سے پیچھے ہٹنے پر رضا مندی ظاہر کر دی ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق امریکی تجویز میں اسرائیلی یرغمالیوں کی رہائی پر بات چیت پر زور دیا گیا تھا۔

سی آئی اے و موساد کے سربراہان رواں ہفتے قاہرہ آئینگے

ادھر حماس اسرائیل جنگ بندی کے ایک اور دور کے لیے امریکی سی آئی اے کے سربراہ ولیم برنز اور اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد کے سربراہ کی رواں ہفتے قاہرہ آمد متوقع ہے۔

مصری میڈیا کے مطابق مصر غزہ جنگ بندی کے مذاکرات کے لیے اسرائیل و امریکی وفود کی میزبانی کرے گا۔

ایک مصری اہلکار نے بتایا ہے کہ مصر حماس کے ساتھ جنگ بندی اور یرغمالیوں کے بدلے قیدیوں کے تبادلے پر بات چیت کر رہا ہے۔

امریکی سی آئی اے کے سربراہ ولیم برنز اگلے ہفتے قطر کا دورہ کریں گے، جبکہ اسرائیلی مذاکرات کار بھی دوبارہ قطر کا دورہ کرنے والے ہیں۔

اسرائیلی سرگرم کارکنوں کے مظاہرے

دوسری جانب اسرائیل میں سرگرم کارکنوں نے 7 اکتوبر کو حماس کے حملوں کے 9 ماہ مکمل ہونے پر ملک بھر میں مظاہروں کا آغاز کر دیا۔

عرب میڈیا نے بتایا ہے کہ اسرائیلی سرگرم کارکنوں کی جانب سے ’ڈے آف ڈسرپٹشن‘ کے نام سے یہ مظاہرے شروع کیے گئے ہیں۔

عرب میڈیا کے مطابق ان مظاہروں کے ذریعے اسرائیلی حکومت پر نئے انتخابات اور غزہ میں قیدیوں کی رہائی کے لیے جنگ بندی کے معاہدے کے لیے دباؤ بڑھایا جائے گا۔

اسرائیلی حملے، مزید 9 فلسطینی شہید

ادھر رفح شہر میں اسرائیلی فوج کی شدید فائرنگ اور شیلنگ جاری ہے، وسطی غزہ اور غزہ شہر کے علاقوں پر حملوں میں مزید 9 فلسطینی شہید ہو گئے۔

شجاعیہ کے علاقے میں بھی شدید لڑائی جاری ہے، اسرائیلی حملوں کے باعث کئی خاندان محصور ہو گئے۔

Leave a Comment