امریکی سپریم کورٹ نے مجرمانہ کیسز میں سابق صدر ٹرمپ کو جزوی استثنیٰ دے دیا

تصویر سوشل میڈیا۔
تصویر سوشل میڈیا۔

امریکی سپریم کورٹ نے مجرمانہ کیسز میں سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو جزوی استثنیٰ دے دیا۔

واشنگٹن سے خبر ایجنسی کے مطابق سپریم کورٹ نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کو سابق صدر کی حیثیت سے اپنے خلاف مقدمات میں کچھ استثنیٰ مل سکتا ہے۔ 

سپریم کورٹ نے مزید کہا کہ سابق صدور کو اپنے بنیادی آئینی اختیارات کےلیے مکمل استثنیٰ حاصل ہے۔ 

امریکی سپریم کورٹ کے مطابق سابق صدور نجی حیثیت میں کیے گئے اقدامات کےلیے استغاثہ سے استثنیٰ کے حقدار نہیں ہیں۔ 

خبر ایجنسی کے مطابق سپریم کورٹ میں ٹرمپ کے حق میں 6 ججوں اور مخالفت میں 3 ججوں نے فیصلہ دیا۔ 

خبر ایجنسی کے مطابق سپریم کورٹ نے ٹرمپ کا استثنیٰ کیس لوئر کورٹ میں واپس بھیج دیا۔ 

خبر ایجنسی کے مطابق ٹرمپ نے سپریم کورٹ کے فیصلے کو جمہوریت کےلیے بڑی فتح قرار دے دیا۔ 

خبر ایجنسی کے مطابق ٹرمپ پر 2020 کے صدارتی الیکشن میں انتخابی نتائج روکنے کی سازش اور انتخابات کے نتائج میں دھاندلی کے جھوٹے دعوے کا الزام بھی ہے۔

دوسری جانب صدر بائیڈن کی انتخابی مہم کے عہدیدار نے کہا ٹرمپ اپنے آپ کو قانون سے بالاتر سمجھتے ہیں۔

Leave a Comment