ابراہیم رئیسی، ضیاء الحق سمیت کئی ممالک کے صدور کی فضائی حادثے میں موت

ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کی ہیلی کاپٹر حادثے میں شہید ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے۔

ہیلی کاپٹر حادثہ تبریز سے 100 کلومیٹر دور پیش آیا، صدر کے ہیلی کاپٹر کا ملبہ ایک پہاڑی سے ملا تھا۔

آیئے ایک نظر 1940 سے اب تک پیش آنے والے ناگہانی فضائی حادثات و واقعات پر نظر ڈالتے ہیں جن میں مختلف ممالک کے صدور جان کی بازی ہار گئے۔

پیراگوئے کے صدر ہوزیف فیلکس ایس ٹیگریبیا (José Félix Estigarribia) 52 برس کی عمر میں پیراگوئے کے شہر الٹوس میں طیارے کے حادثے میں ہلکا ہوگئے تھے۔ ان کے طیارے کو 7 ستمبر 1940 کو حادثے کا شکار ہوا تھا۔

17 مارچ 1958 کو فلپائن کے ساتویں صدر ریمن میگسیسے (Ramon Magsaysay) 49 برس کی عمر میں فلپائن کے شہر بالمبن سیبو میں طیارے کے حادثے میں ہلکا ہوگئے تھے۔

16 جون 1957 کو برزیل کے صدر نیریو راموس (Nereu Ramos) کا ہوائی جہاز اپنے ہی ملک کے شہر (São José dos Pinhais) میں گر کر تباہ ہوگیا تھا، جس کے نتیجے میں برازیلین صدر 69 برس کی عمر میں ہلاک ہوگئے تھے۔

عراقی صدر عبدالسلام محمد عارف کا ہوائی جہاز 13 اپریل 1966 کو دارالحکومت بغداد میں حادثے کا شکار ہوا تھا، جس کے نتیجے میں عراق کے دوسرے صدر صرف 45 برس کی عمر میں شہید ہوگئے تھے۔

برازیلین فوجی سربراہ اور صدر مارشل ہمبرٹو ڈی ایلنکار کاسٹیلو برانکو (Humberto de Alencar Castelo Branco) کا ہوائی جہاز 18 جولائی 1967 کو برازیل کے شہر فورٹالیزا میں گر کر تباہ ہوگیا تھا۔ انہوں نے 1964 کی فوجی بغاوت کے بعد پہلے آمر صدر کی حثیثت سے عہدہ سنبھالا تھا۔

دائیں جانب سے صدر ہوزیف فیلکس ایس ٹیگریبیا، صدر ریمن میگسیسے، صدر نیریو راموس، صدر عبدالسلام محمد عارف، صدر مارشل ہمبرٹو ڈی ایلنکار کاسٹیلو برانکو، صدر رینے بیرنٹوس، جنرل صدر احمد اولد بوسیف، صدر جیمی رولڈوس، صدر سامورا مچل، صدر بورس ٹرائکوسکی، پولینڈ کے صدر لیخ کازنسکی اور سابق صدر سیبسٹین پنیرا
دائیں جانب سے صدر ہوزیف فیلکس ایس ٹیگریبیا، صدر ریمن میگسیسے، صدر نیریو راموس، صدر عبدالسلام محمد عارف، صدر مارشل ہمبرٹو ڈی ایلنکار کاسٹیلو برانکو، صدر رینے بیرنٹوس، جنرل صدر احمد اولد بوسیف، صدر جیمی رولڈوس، صدر سامورا مچل، صدر بورس ٹرائکوسکی، پولینڈ کے صدر لیخ کازنسکی اور سابق صدر سیبسٹین پنیرا
  • 27 اپریل 1969 کو بولیویا کے صدر رینے بیرنٹوس (René Barrientos) کا ہیلی کاپٹر حادثہ کا شکار ہوا، اس حادثے کے نتیجے میں بولیویا کے صدر اور فوجی رہنما 49 برس کی عمر میں چل بسے۔

    27 جنوری 1979 کو اسلامی جمہوریہ موریتانیہ کے جنرل صدر احمد اولد بوسیف کے ہوائی جہاز کو مغربی افریقہ کے ملک سینیگال میں حادثہ پیش آیا، جس کے نتیجے میں انہوں نے 45 برس کی عمر میں شہادت نوش کی۔

    ایکواڈور کے 33ویں صدر جیمی رولڈوس (Jaime Roldós Aguilera) کا طیارے 24 مئی 1981 کو حادثے کے نتیجے میں گر کر تباہ ہوگیا۔

    افریقی ملک موزمبیق کی آزادی کے بعد بطور پہلے صدر خدمات انجام دینے والے فوجی کمانڈر سامورا مچل کا طیارہ 19 اکتوبر 1986 کو جنوبی افریقہ کی سرحد کے قریب گر کر تباہ ہو گیا تھا۔

    پاکستانی صدر جنرل محمد ضیاء الحق کا طیارہ 17 اگست 1988 کو بہاولپور میں گرکر تباہ ہوا۔ جاں بحق ہونے سے قبل جنرل محمد ضیاء الحق بطور چھٹے صدر ملک کی خدمات انجام دے رہے تھے۔ انہوں نے یکم مارچ 1976 میں آرمی چیف کا عہدہ جبکہ 16 ستمبر 1978 کو صدر پاکستان کا عہدہ سنبھالا تھا۔ 64 برس کی عمر میں شہادت سے قبل وہ پاکستان آرمی کے دوسرے چیف آف آرمی اسٹاف کے طور پر بھی خدمات انجام دے رہے تھے۔

    صدر بورس ٹرائکوسکی، یورپی ملک شمالی میسیدونیہ میں صدارت کا عہدہ سنبھالنے والے ملک کے دوسرے صدر تھے، ان کا طیارہ 26 فروری 2024 کو موسٹر کے علاقے میں گرکر تباہ ہوگیا۔

    مغربی روسی شہر سولنسک میں 10 اپریل 2010 کو پولینڈ کے صدر لیخ کازنسکی کا طیارہ گر کر تباہ ہوگیا، جس کے نتیجے میں پولینڈ کے صدر لیخ کازنسکی، ان کی اہلیہ سمیت کم از کم اٹھاسی افراد ہلاک ہوئے۔ ان کے طیارے کو حادثہ شدید دھند کے باعث پیش آیا تھا۔

    چلی کے سابق صدر سیبسٹین پنیرا 6 فروری 2024 کو ہیلی کاپٹر حادثے کے نتیجے میں ہلاک ہوئے۔ حادثے کے وقت ہیلی کاپٹر میں 74 سالہ سابق صدر سیبسٹین پنیرا سمیت تین دیگر افراد بھی شامل تھے۔ ان کا ہیلی کاپٹر جنوبی چلی کی جھیل میں گرکر تباہ ہوا تھا۔

Leave a Comment