آپریشن عزم استحکامعمران خان حکومت کی بات سننے پر رضا مند ہوگئے

 (طیب سیف)بانی پی ٹی آئی عمران خان نے وزیراعظم کی بلائی گئی آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت کا فیصلہ کرلیا۔

اڈیالہ جیل میں 90 ملین پاؤنڈ کیس میں پیشی کے دوران صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ہماری پارٹی اے پی سی میں شرکت کرے گی اور حکومت کا مؤقف سنے گی۔

انہوں نے کہا کہ  افغانستان کےساتھ ہمارا ڈھائی ہزار کلومیٹر کا بارڈر ہے، عزم استحکام آپریشن پر ہمارے تحفظات موجود ہیں، اس آپریشن سے ملک میں عدم استحکام مزید بڑھے گا۔

عمران خان نے کہا ہے کہ یہ ملکی ایشو ہے ، ملک کی خاطر اے پی سی میں شرکت کریں گے ۔

ضرورپڑھیں: پی ٹی آئی  رہنما نے گرڈ سٹیشن سے بجلی زبردستی بحال کرا دی

بانی پی ٹی آئی نے چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ پر  عدم اعتماد کر دیا ،عمران خان نے کہا ہے کہ چیف جسٹس پی ٹی آئی کے مقدمات میں اثر انداز ہوتے ہیں انصاف نہیں دیا جا رہا ،وکلاء سے مشورہ کر رہے ہیں بھوک ہڑتال کروں گا ،مقدمات کی آزادانہ  سماعت نہیں ہو رہی ،جیل میں میرا ایک سال مکمل ہونے والا ہے ۔

صحافی نےسوال کیا کہ  کیا ان ہاؤس تبدیلی کے بعد موجودہ صورتحال میں آپ کی حکومت آتی ہے تو پاکستان کو موجودہ صورتحال سے نکال سکیں گے ؟عمران خان نے جواب دیا کہ ملک کو بحرانوں سے ایک ہی صورت میں نکالا جا سکتا ہے کہ آزاد شفاف انتخابات کر کے اقتدار منتخب حکومت کے سپرد کیا جائے،عوامی طاقت سے منتخب حکومت ہی پاکستان کو بحرانوں سے نکال سکتی ہے۔

 بانی پی ٹی آئی نے پارٹی رہنماؤں کو پبلک مقامات پر اپنے اختلافات کا اظہار کرنے سے روک دیا،ان کا کہنا تھا کہ عمر ایوب اور شبلی فراز سمیت دیگر رہنماؤں نے بہت قربانیاں دی  ہیں ۔بہت اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔

یاد رہے کہ حکومت پاکستان نے ملک میں ’عزم استحکام‘آپریشن شروع کرنے کا فیصلہ کیا ،تمام بڑی سیاسی جماعتوں نے  اس آپریشن کی مخالفت کی ہے،حکومت نے قومی اتفاق رائے قائم کرنے کیلئے اے پی سی بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

Leave a Comment